Android AppiOS App

خواجہ سرا کا انوکھاکام

  پیر‬‮ 22 فروری‬‮ 2021  |  23:17

بھارت میں ایک خواجہ سرا نے اپنے بچوں کی ماں کے ساتھ ساتھ باپ بننے کی بھی تیاری پکڑ لی۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق یہ 25سالہ لڑکی دراصل لڑکا تھی جو اب سرجری کے ذریعے جن، س تبدیل کروا کے لڑکی بن چکی ہے۔ اس نے لڑکی بننے سے پہلے اپنے سپرمز نکلوا کر لیبارٹری میں محفوظ کروا لیے تاکہ جب وہ مکمل خاتون بن

جائے تواپنے ہی ان سپرمز کے ذریعے بچے پیدا کر سکے۔ رپورٹ کے مطابق اس لڑکی کا نام ڈاکٹر جیسنور ڈیریا ہے۔ اس کا تعلق بھارتی ریاست گجرات کے شہر آنند سے ہے اور اس نے حال ہی میں روس کی ایک یونیورسٹی سے ایم بی بی ایس کی ڈگری لی ہے۔ وہ گجرات کی پہلی ’ٹرانس جینڈر‘ ڈاکٹر ہے۔ ڈاکٹر ڈیریا

کا کہنا تھا کہ ”مجھے اوائل عمری سے ہی لگتا تھا کہ میں لڑکا نہیں بلکہ لڑکی ہوں تاہم سماج کی وجہ سے میں خاموش رہی۔ تاہم جب میں تعلیم کے لیے بیرون ملک گئی تو میں نے خود کو آزاد محسوس کیا اور تب اپنی  تبدیل کروانے کا فیصلہ کیا۔ میں نے اپنے سپرمز محفوظ کروا رکھے ہیں۔ وقت آنے پر میں ان سے اولاد پیدا کروں کی۔ میں اس بچے کا باپ ہوں گی لیکن ایک ماں کے طور پر اس کی پرورش کروں گی۔“

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎