Android AppiOS App

ٹک ٹاک پر غیراخلاقی مواد روکنے کے لیے حکومت پاکستان نے بڑا قدم اٹھا لیا

  جمعرات‬‮ 11 فروری‬‮ 2021  |  21:34

ہائی کورٹ نے ٹک ٹاک پرغیراخلاقی مواد روکنے کیلئے اقدامات کا حکم دیتے ہوئے کہا صرف کاغذی کارروائی نہیں گراؤنڈ پر ایکشن بھی ہونا چاہیے۔ تفصیلات کے مطابق پشاور ہائی کورٹ میں ٹک ٹاک پرغیراخلاقی موادکی روک تھام کیلئے درخواست پر سماعت ہوئی، ڈی جی پی ٹی اے، ڈی جی ایف آئی اے اور ڈی جی پیمرا عدالت میں پیش ہوئے۔ چیف جسٹس نے سوال کیا کہ آپ لوگوں کوپتہ ہےآپ کوعدالت کیوں بلایا ہے، ڈی جی پی ٹی اے نے جواب دیا کہ جی پتہ ہےٹک ٹاک سے متعلق کیس میں بلایا ہے۔

چیف جسٹس قیصررشید نے کہا کہ ٹک ٹاک پرغیراخلاقی ویڈیوزلوگ اپلوڈ کرتے ہیں، غیراخلاقی ویڈیوزکی روک تھام کیلئےآپ لوگ کیا کر رہے ہیں، یہ اسلامک ری پبلک آف پاکستان ہے ، یہ یہاں

کیا ہورہا ہے۔ جسٹس قیصررشید خان نے استفسار کیا کہ کس کلچرکو یہاں پر فروغ دے رہے ہیں؟ غیراخلاقی مواداپلوڈکرنے سے نوجوان متاثر ہورہے ہیں، نوجوان نسل کوبرائیوں سےبچاناہماراقومی فریضہ ہے۔

چیف جسٹس ہائی کورٹ کا کہنا تھا کہ ٹک ٹاک پر جو چیز اپلوڈ ہوتی ہے، فلٹر کرنے کیلئے اقدامات کیے جائیں، آپ سب مل بیٹھ کراس کا کوئی حل نکالیں، آئندہ سماعت پر تفصیلی رپورٹ جمع کریں، صرف کاغذی کارروائی نہیں گراؤنڈ پر ایکشن بھی ہونا چاہیے۔ ڈی جی پی ٹی اے نے کہا کہ ہم اس کے لیے اقدامات کررہے ہیں، جولوگ خلاف ورزی کرتے ہیں اکاؤنٹ بلاک کردیتے ہیں۔ عدالت نے ٹک ٹاک پرغیراخلاقی مواد روکنے کیلئے اقدامات کا حکم دیتے ہوئے آئندہ سماعت پرتفصیلی رپورٹ طلب کرلی اور سماعت 11 مارچ تک ملتوی کردی۔