Android AppiOS App

انگریز گورے کیوں ہوتے ہیں؟ جانیں اِن سے متعلق ایسی بات جو بہت کم لوگ جانتے ہیں

  جمعرات‬‮ 11 فروری‬‮ 2021  |  18:44

ایسا ہی ایک سوال اکثر دماغ میں آتا ہے کہ آخر یہ انگریز اتنے گورے کیوں ہوتے ہیں؟دراصل اس کی وجہ یہ ہے کہ جلد (اسکِن) ہمارے جسم کی ریپنگ یعنی پرت ہے، قدرت نے ہر انسان کو مختلف رنگ عطا کیا ہے جس کا انحصار ہمارے رہنے کی جگہ پر مبنی ہے، یعنی جہاں ہم رہتے ہیں یا ہمارے آباواجداد رہتے آ رہے ہیں اُس

جگہ کا موسم کیسا ہے۔جہاں ہم سالوں سے مقیم ہوں اگر وہاں کا موسم گرم اور سورج کی تپش کی لپیٹ میں ہو تو وہاں کی جلد کا رنگ بھی گہرا ہو جاتا ہے جیسا کہ ایشیاء میں رہنے والے لوگ ہیں، بلکل اِسی طرح انگریز اور اِن کے آباواجداد صدیوں سے جہاں مقیم ہیں وہاں کا موسم ٹھنڈا اور سورج

کی تپش میں نرمی انگریزوں کی گوری رنگت کا سبب بنی ہے۔انگریزوں کی قوتِ مدفعیت زیادہ اور وٹامِن ڈی کی مکمل مقدار بھی اُن کے گورے

رنگ کی ایک وجہ ہے، انسان کی جِلد وٹامن ڈی کی تیاری اور فولیٹ کے مابین توازن برقرار رکھتی ہے۔عام طور پر جِلد کا رنگ کسی آبادی کے شمسی تابکاری یعنی سورج کی تپش والے علاقے پر مبنی ہوتا ہے، کتنے وقت سے انسان کس جگہ اور کس موسم والے علاقے میں رہتا ہے یہی اس کی رنگت کی اصل وجہ ہے۔تاہم انگریزوں کی گوری رنگت اصل وجہ اُن کے خاندان کی صدیوں سے چلی آ رہی ٹھنڈے موسم والی رہائش کی جگہ اور وٹامن ڈی کی مکمل مقدار ہے۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎