Android AppiOS App

تحریک انصاف کی حکومت ختم ہوسکتی ہے!سابق چیف جسٹس نے عمران خان کے لیے خطرے کی گھنٹی بجا دی

  جمعہ‬‮ 15 جنوری‬‮ 2021  |  18:43

سندھ ہائی کورٹ کے سابق چیف جسٹس کا کہنا ہے کہ اگر فارن فنڈنگ کیس میں تحریک انصاف کے خلاف فیصلہ آگیا اور 2018 کے انتخابات کو غیر قانونی قرار دے دیا گیا تو پھر تحریک انصاف کی حکومت ختم ہوجائے گی . نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے جسٹس (ر) شائق عثمانی کا کہنا تھا کہ

سب جانتے ہیں کہ تحریک انصاف کے پاس پہلے ایک سیٹ تھی اسکی وجہ یہ تھی کہ اس جماعت کے پاس پیسے کی کمی تھی، لیکن 2013ء کے عام انتخابات کے بعد صورتحال بدل گئی اور تحریک انصاف کے پاس بہت پیسہ آگیا اور وہ اپنی مرضی سے پیسہ استعمال کرنے لگی۔

جسٹس (ر) شائق عثمانی کا مزید کہنا تھا کہ تحریک انصاف کو فنڈنگ

اندرون ملک نہیں بلکہ بیرون ملک سے ہوئی ہے، کیونکہ پاکستان میں موجود ڈونر صرف اس جماعت پر پیسہ لگاتے ہیں جسکا اقتدار میں آنے کا امکان ہو لیکن تحریک انصاف کا 2013ء کے انتخابات میں کوئی بھی ایسا امکان نہیں تھا ، اب یہ معلوم نہیں کہ اتنا سارا پیسہ کہاں سے آیا اور کس طرح آیا۔

جسٹس (ر) شائق عثمانی کے مطابق بظاہر یہی لگتا ہے کہ پیسہ باہر سے آیا ہے، باہر سے پاکستان پیسہ لانے کا کوئی نقصان نہیں شرط یہ ہے طریقہ قانونی ہو، اوور سیز پاکستانی کسی بھی جماعت کو فنڈ دے سکتے ہیں لیکن اگر یہ ہی پتہ نہ ہو کہ پیسہ آیا کہاں سے ہے تو پھر کسی بھی جماعت کے لیے خطرے کی نشانی ہے۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎