Android AppiOS App

سانحہ ماڈل ٹاؤن کے پیچھے وہی ہاتھ تھے جو،،، احسن اقبال کے بیان نے ہلچل مچا دی

  پیر‬‮ 11 جنوری‬‮ 2021  |  13:09

اکستان مسلم لیگ ن کےسیکرٹری جنرل احسن اقبال نے کہا ہے کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے پیچھے وہی ہاتھ تھے جو تحریک انصاف کےلانگ مارچ کے پیچھے تھے، دونوں کے درمیان بہت رابطہ تھا،یہ بات ریکارڈ پر لانا چاہتا ہوں کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کا تعلق اُس لندن پلان کی کامیابی سے تھا جو آپریشن ضربِ عضب شروع ہونے کے

بعد دم توڑ گیا تھا۔لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیرداخلہ احسن اقبال نے کہا کہ اگر سانحہ ماڈل ٹاؤن نہ ہوتا تو طاہر القادری واپس کیوں آتے؟وہ تو اپنی واپسی کاپروگرام منسوخ کرچکےتھے،جب آپریشن ضرب عضب جون میں شروع ہوچکا تھا،سانحہ ماڈل ٹاؤن کے ذمہ داروں کو انصاف کے کٹہرے میں اپنے”کزن” کے ساتھ کھڑا کرنے کا وعدہ کس نے کیا تھا؟ ڈھائی سال

ہوگئے کیا مسلم لیگ کی حکومت ہے، کس کی حکومت ہے؟۔انہوں نےکہاکہ شہبازشریف نےایوان وزیراعظم میں سانحہ ماڈل ٹاؤن کےلوگوں سےملاقات کی اورمیں اِس کا چشم دید گواہ ہوں،اس موقع پرمیں نے زندگی میں پہلی مرتبہ شہباز شریف کی آنکھوں میں آنسو دیکھے تھے۔ن لیگی رہنما نے کہا کہ ہزارہ برادری کے اراکین نے افسوس کا اظہار کیا ہےکہ حکومت نے ایک مسلک کے وزیر کو بھیج کر سانحہ مچھ کو مسلک کا مسئلہ بنا دیا ہے، قوم نے دیکھ لیا عمران خان سنگدل بھی ہیں۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎