Android AppiOS App

’’ خواجہ آصف میرے پاس آئے اور کہنے لگے کہ۔۔۔‘‘ مریم نواز نے ایسا انکشاف کر دیا کہ پاکستانیوں کے لیے یقین کرنا مشکل ہوگیا

  بدھ‬‮ 30 دسمبر‬‮ 2020  |  13:46

نائب صدر مسلم لیگ (ن) مریم نواز نے کہا ہے کہ خواجہ آصف کو گرفتار نہیں انہیں اغ وا کیا گیا ہے۔ اسلام آباد میں میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ خواجہ آصف نےمجھےبتایاکہ انہیں کسی نےبلایااورکہانواز شریف کوچھوڑدیں۔ اس پر خواجہ آصف نے کہا کہ خواجہ آصف نے

انہیں کہا میں ہرطرح کے رد عمل کیلئے تیار ہوں آپ کوجوکرنا ہے کریں۔ خواجہ آصف سےیہ باتیں کس نےکہیں وہ نام ان کی امانت ہے،ابھی نہیں بتاناچاہتی ہوں۔ انہوں نے کہا کہ خواجہ آصف کی گرفتاری پر پی ڈی ایم ردعمل دے گی۔ شکست کےخوف کوسامنےرکھ کرفیصلے کیے جارہے ہیں۔ خواجہ آصف کو گرفتار کر کے ہمیں دھمکانا چاہتے ہیں۔ ان کو معلوم ہونا چاہیے کہ یہ سب ڈرنے والے نہیں ہیں

یہ ظلم سہہ کر آئے ہیں ۔ خواجہ آصف کوچھوڑناپڑےگاورنہ ردعمل بہت سخت آئےگا۔ س مرتبہ بیان بازی سےکام نہیں چلےگا،فیصلہ ہوگااوراس پرعملدرآمد ہوگا۔ مریم نواز نے کہا کہ یہ ہتھکنڈے ان کی حکومت کو گھر لے جانے میں جلدی کریں گے۔ عمران خان کوجاناہوگا،یہ ہتھکنڈےروک نہیں سکیں گے،جلدی جاناہوگا ۔ ہمیں یہ پیغام ملا ہے کہ حکومت بری طرح ڈر گئی ہے۔ میں عدلیہ سےکہوں گی کہ قوم کی نظریں آپ کی طرف دیکھ رہی ہیں عدلیہ یہ آبزرویشن دےچکاہے،آپ کوآبزرویشن تک نہیں رہنا چاہیے قوم کوانصاف دینا عدلیہ کی ذمے داری ہے۔ نائب صدر مسلم لیگ (ن) نے کہا کہ نیب عمران خان کا آلہٰ کاربن کربغیر کسی کیس کےلوگوں کوگھروں سےاٹھالیتاہے۔ نیب کو آٹا چور، ایل این جی چور کیوں نظر نہیں آرہے ہیں۔ نیب کو چینی چور ، بلین ٹرین چور کیوں

نظر نہیں آرہے ہیں ؟۔ اتنی بڑی بڑی چیزیں نیب کو نظر نہیں آتیں، نیب اندھی ہے ۔ نواز شریف کی وطن واپسی کے حوالے سے بات کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ نوازشریف کوبلانےکی حکومت کی کیاحیثیت ہے۔ جب نوازشریف کاعلاج مکمل ہوگاوہ واپس آئیں گے۔ ہم نے کوئی وعدہ نہیں کیا تھا، ان کی صحتیبابی سے ان کی واپسی مشروط تھی۔ انہوں نے مزید کہا کہ پنجاب اسمبلی کےاستعفے میرے پاس آچکے ہیں۔ صرف ایک رکن کا استعفیٰ نہیں لیا کیونکہ وہ وینٹی لیٹر پر موجود ہیں۔ یہ ذرائع سے خبر پیپلز پارٹی نہیں کوئی اور ریلیز کرتا ہے۔ پی ڈی ایم میں کوئی اختلاف نہیں ہے۔ فضل الرحمان بیان بازی نہیں کررہےبلکہ ان کےپارٹی کےکچھ لوگ شرارت کررہے ہیں۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎