Android AppiOS App

محمد بن سلمان کی مقبولیت کا اثر! ہزاروں سعودیوں نے کیا کام کرنا شروع کر دیا؟ شاہی خاندان کے لیے یقین کرنا مشکل

  منگل‬‮ 29 دسمبر‬‮ 2020  |  14:01

سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کو موجودہ دور کی اہم اور بااثر ترین شخصیات میں سے ایک خیال کیا جاتا ہے۔ خلیجی خطے کی سیاست پر ان کا گہرا اثر و نفوذ ہے۔ سعودی مملکت کو ترقی پر گامزن کرنے اور تیل کے علاوہ دیگر صنعتوں اور شعبوں سے آمدنی حاصل کرنے

کے لیے انہوں نے سعودی ویژن 2030ء متعارف کرایا ہے۔ سعودی معیشت کو ترقی دینے اور اسے ایک اعتدال پسند ریاست بنانے کے لیے سعودی ولی عہد نے خواتین کو ہزاروں کی تعداد میں نوکریاں دی ہیں اور انہیں گاڑی چلانے اور اپنا کاروبار شروع کرنے میں بھی بڑی سہولت دی ہے اور تفریحی سرگرمیوں کے بھی بھرپور مواقع پیدا کیے ہیں۔ اسی وجہ سے سعودی عرب کی نوجوان نسل شہزادہ محمد بن

سلمان سے خاص اُنسیت اور لگاؤ رکھتی ہے اور انہیں سعودی تاریخ کا اہم رہنما مانتی ہے۔ شہزادہ محمد بن سلمان کے سعودی عرب پرگہرے اثرات کا اندازہ اس ایک بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ اب تک سعودی عوام کی بڑی گنتی کورونا ویکسین لگوانے سے گھبرا رہی تھی، تاہم جونہی میڈیا پر ولی عہد کی ویکسین لگوانے کی تصویریں اور ویڈیو سامنے آئیں۔ سعودی عوام نے بھی بلاجھجک ویکسین لگوانے کا فیصلہ کر لیا۔چند گھنٹوں کے اندر ویکسین کے لیے رجسٹریشن کروانے والوں کی گنتی میں ریکارڈ اضافہ ہو گیا۔ سعودی وزیر صحت ڈاکٹر توفیق الربیعہ کے مطابق ولی عہد کے ویکسین لگوانے کی دیر تھی، جس کے بعد ویکسی نیشن کی رجسٹریشن میں یکایک پانچ گنا اضافہ ہو گیا ہے۔ جبکہ ویکسین لگوانے والوں کی گنتی میں بھی تین گنا اضافہ

ہو چکا ہے۔ ڈاکٹر توفیق نے ولی عہد کی طرف سے ملک میں کرونا وبا پر قابو پانے کی کوششوں اور ویکسینوں کی فراہمی میں دلچسپی کا مظاہرہ کرنے پر ان کا خصوصی شکریہ ادا کیا۔واضح رہے کہ ولی عہد کو جمعہ کی شام کو کورونا سے بچاؤ کی ویکسین لگائی گئی تھی۔ ویکسین لگوائے جانے کی ایک تصویر اور ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی جس پر لوگوں کی جانب سے بے حد خوشی کا اظہار کیا گیا تھا۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎