Android AppiOS App

اپنی ٹیکنیاں فل کروالیں ،یکم جنوری سے پٹرول کتنا مہنگاہونے والاہے ،ہوش اڑ ادینے والی خبرآگئی

  پیر‬‮ 28 دسمبر‬‮ 2020  |  16:00

یکم جنوری سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔ تفصیلات کے مطابق یکم جنوری سے پیٹرول 2 روپے 76 پیسے فی لیٹر جب کہ ڈیزل کی قیمت 3 روپے 12 پیسے فی لیٹر تک بڑھ سکتی ہے۔ آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے یکم جنوری سے 15 روز کے لیے پیٹرولیم مصنوعات کی

قیمتوں میں رد و بدل کی سمری پیٹرولیم ڈویژن کو ارسال کر دی۔پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کا حتمی فیصلہ وزارت خزانہ وزیر اعظم کی مشاورت سے کرے گی۔ یاد رہے کہ وفاقی حکومت نے 15 دسمبر کو پیٹرول کی قیمت میں 3 روپے فی لیٹر اور ڈیزل کی قیمت میں بھی اتنا ہی اضافہ کیا تھا۔ پندرہ دسمبر کو پیٹرول کی نئی قیمت 103 روپے 69

پیسے فی لیٹر اور ڈیزل کی نئی قیمت 108 روپے 44 پیسے فی لیٹر مقرر کی گئی تھی۔وزارت خزانہ نے آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) کی جانب سے بھیجی گئی سمری پر غور کرنے کے بعد پٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا نوٹیفیکیشن جاری کیا تھا۔اس جاری کردہ نوٹیفکیکیشن کے مطابق پیٹرول کی فی لیٹر قیمت 103 روپے 69 پیسہ ، ہائی اسپیڈ ڈیزل 108 روپے 44 پیسہ، لائٹ اسپیڈ ڈیزل 67 روپے 86 پیسہ، مٹی کا تیل 70 روپے 29 پیسہ فی لیٹر مقرر کی گئی تھی۔ ان قیمتوں کا اطلاق اگلے 15 دسمبر سے اگلے 15 روز کے لیے ہونا تھا۔ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے امکان کی خبر پر عوام نے حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ کورونا کے پیش نظر لاک ڈاؤن کی وجہ سے معاشی حالات

پہلے ہی ابتر ہیں اور ایسے میں حکومت پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کر رہی ہے جس سے عوام پر مزید بوجھ پڑے گا۔ حکومت کو چاہئیے کہ عوام کو ریلیف دے بجائے اس کے کہ عوام پر مہنگائی کا مزید بوجھ ڈالے۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎