Android AppiOS App

شوق کا کوئی مول نہیں ،9سال قبل آئی فون کیلئے گردہ بیچنے والا نوجوان آج کس حال میں ہے؟

  جمعرات‬‮ 19 ‬‮نومبر‬‮ 2020  |  20:36

چینی شہری نے نو سال قبل آئی فون خریدنے کیلئے اپنا گردہ بیچا لیکن آج وہ موت کے دہانے پر کھڑا جان نکلنے کا انتظار کررہا ہے، اسے روزانہ ڈائلیسس کی ضرورت ہوتی ہے۔کہتے ہیں کہ شوق کا کوئی مول نہیں ہوتا اس بات کو ایک چینی شہری نے سچ کردکھایا، آج سے نو سال پہلے13 اکتوبر 2011 میں جب ایپل کمپنی نے اپنے

آئی فون12 سیریز کو متعارف کرایا تو چین کا ایک باشندہ اسے دیکھ کر اس کا گرویدہ ہوگیا۔17سالہ وانگ شانگکو نے اس فون کو ہر قیمت پر خریدنے کا فیصلہ کیا اور جب موبائل خریدنے کیلئے معقول رقم کا بندوبست نہ ہوسکا تو اس نے اپنے گردے کو بیچنے کی ٹھان لی۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق نوجوان جو اس

وقت 17سال کا تھا نے اپنا گردہ 3ہزار 273ڈالر میں فروخت کیا اور اس رقم سے آیک آئی فون فور اور دو آئی پیڈ خرید لیے۔آج یہ نوجوان 25سال کا ہے اور نو سال گزرنے کے بعد وہ بستر سے لگ چکا ہےاور اسے زندہ رہنے کیلئے روزانہ ڈائلیسز کرانا پڑرہا ہے۔ رپورٹ کے مطابق چونکہ وہ ایپل فون کا مالک بننے کے لئے بے چین تھا، اس سلسلے میں اس نے ایک آن لائن چیٹ روم میں آرگن ہارویسٹر کے پیغام کا جواب دیا، جس میں وانگ کو بتایا گیا تھا کہ وہ گردہ فروخت کرکے20،000 یوآن یا 3،000 ڈالر کماسکتا ہے۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎