Android AppiOS App

حکومت نے نئے سیونگ اکاؤنٹس کھولنے پر پابندی کیوں لگا دی ؟وجہ کیا بنی اور اس کام کا اطلاق کس تاریخ سے ہو گا؟جانئے

  ہفتہ‬‮ 14 ‬‮نومبر‬‮ 2020  |  20:35

پاکستان پوسٹ نے نئے سیونگ اکاؤنٹس کھولنے پر پابندی لگا دی ہے جس کے بعد ایف اے ٹی ایف کا ایک اور مطالبہ پورا ہوگیا ہے۔نجی ٹی وی چینل کے مطابق پاکستان پوسٹ نے نئے سیونگ اکاؤنٹس کھولنے پر پابندی لگا دی ہے، پابندی کا اطلاق 16 نومبر سے ہوگا تاہم پرانے اکاؤنٹس چلتے رہیں گے۔

اس کے علاوہ نئے سیونگ سرٹیفیکیٹس کی فروخت پر بھی پابندی لگا دی گئی۔ دونوں پابندیوں کا باقاعدہ نوٹی فکیشن جاری کر دیا گیا ہے۔ملک بھر کے جی پی اوز اور ڈاک خانوں کی اسٹیٹ بینک سے آن لائن کمپیوٹرائزیشن بھی شروع کر دی گئی ہے، اس اقدام کا مقصد ملک بھر کے ڈاک خانوں سے ترسیل زر کا مکمل کمپیوٹرائزڈ ڈیٹا رکھنا ہے۔ سیونگ اکاؤنٹس سے متعلق پابندی بھی سیونگ

اکاؤنٹس کی مکمل کمپیوٹرائزیشن تک برقرار رہے گی۔واضح رہے کہ پاکستان کو ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ سے نکالنے کے لیے جن شرائط پر عمل کرنا ہے ان میں سے ایک سیونگ اکاؤنٹس کا خاتمہ بھی ہے۔دوسری طرف ایک اور خبر کے مطابق ” آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مزید کمی کی تجویز پر غور شروع کر دیا۔ اوگرا ذرائع سے موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق اوگرا نے آئندہ پندرہ روز کے لیے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مزید کمی کا امکان ہے۔ذرائع کے مطابق پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں دو سے ساڑھے تین روپے کمی زیر غور ہے جس کے تحت پیٹرول کی فی لیٹر قیمت تین روپے تک کم ہونے کا امکان ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اوگرا نے ڈیزل کی فی لیٹر قیمت دو سے تین روپے کم کرنے پر بھی غور شروع کر دیا۔ واضح رہے کہ اوگرا کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کی سمری وزارت خزانہ کو ارسال کی جاتی ہے جس کے بعد وزارتِ خزانہ کی جانب سے نئی قیمتوں کا تعین کیا جاتا ہے۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎