Android AppiOS App

’’آج سے ہمارا نواز شریف سے کوئی واسطہ نہیں ‘‘ مرکزی رہنما نے ن لیگ کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی سے استعفیٰ دیتے ہوئے بڑا چیلنج کر دیا

  ہفتہ‬‮ 7 ‬‮نومبر‬‮ 2020  |  18:44

سابق وزیر اعلیٰ بلوچستان نواب ثناء اللہ زہری نے ن لیگ کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی سے مستعفی ہونے کا اعلان کردیا۔ انہوں نے کہا کہ آج سے نوازشریف کی جتنی حد تک مخالفت ہوسکی کریں گے، نوازشریف کا اصل روپ گلی گلی گھر گھر دکھائیں گے۔ انہوں نے کوئٹہ میں عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نوازشریف

نے ہم سے بےوفائی کی، نوازشریف کی عادت میں ڈسنا ہے، ضیاء الحق کا بیٹا بھی نواز شریف کی بے وفائی کے قصے سناتا ہے۔ نواز شریف تم نے باعزت آدمیوں کو بےعزت کرانے کی کوشش کی۔ لیکن ہم بلوچستان کی سرزمین پر رہنے والے ہیں۔ خیرات نہیں عزت مانگتے ہیں۔ بےعزتی کے باوجود جنرل عبدالقادر بلوچ نے پارٹی سے وفاداری نبھائی۔ چیلنج کرتا ہوں ن لیگ کے

ٹکٹ پرایک سیٹ بھی جیت کردکھا دیں۔ پھر بات کریں گے ، ثناء اللہ زہری نے ن لیگ کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی سے مستعفی ہونے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ آج سے نوازشریف کی جتنی حد تک مخالفت ہوسکی کریں گے۔ نوازشریف کا اصل روپ گلی گلی گھر گھر دکھائیں گے۔ اس موقع پر عبدالقادر بلوچ نے کہا کہ چیف جھالاوان نے مسلم لیگ کو چلایا، پارٹی کا جو بھی تقریب ہوتی وہ اپنی جیب سے کرتے تھے۔کہتے وجہ یہ ہے کہ اخترمینگل ناراض ہوجائیں گے۔ جس پر میں نے مسلم لیگ ن چھوڑنے

کا فیصلہ کیا۔ دوسرا واقعہ ہوا کہ مریم بی بی نے کسی پارٹی خاتون ورکر سے ملاقات نہیں کی،بلوچ خواتین نے مریم نوازسے ملاقات کی خواہش کی تھی، لیکن وہ بغیر ملاقات چلی جاتی ہے۔ جو وزیراعظم اور بے نظیر بھٹو بننے کا خواب دیکھ رہی ہیں، اخلاقی حیثیت یہ ہے کہ ان کا کیا چلا جاتا؟ اگر وہ ان خواتین سے ملاقات کرلیتی۔میں بھی پروٹوکول کو مدنظر رکھ کر ان کے ساتھ گاڑی میں بیٹھ گیا۔ میں اپنی بلوچ بہنوں سے معذرت کرتا ہوں۔یہ دونوں مسائل ایسے ہیں اگر پارٹی قیادت معذرت کرتی تو گنجائش پیدا ہوجاتی۔لیکن کسی نے پرواہ نہیں کی۔ لیکن حد ہوگئی، جب مجھے کسی نے میاں نواز شریف کی وہ تقریر دکھائی ، جس میں وہ فوج کے افسران، جونیئر افسران کو اپیل کرتے ہیں اور کہتے ہیں کہ تمام مسائل کے ذمہ دار جنرل قمر جاوید باجوہ اور جنرل فیض ہیں۔ پھر ان کے ماتحتوں سے اپیل کرتے ہیں کہ عسکری قیادت جو بھی جونیئرز کو حکم دے اس کو آئینی دیکھ کر ماننا۔لیکن ہماری تربیت ہے ہم

اپنے افسر کے ہر حکم کی تعمیل کریں گے۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎