Android AppiOS App

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا امکان

  ہفتہ‬‮ 31 اکتوبر‬‮ 2020  |  13:55

یکم نومبر سے پاکستان میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا امکان ہے، اوگرا کی طرف سے سمری بھیج دی گئی۔ میڈیا ذرائع کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی کی جانب سے بھیجی گئی سمری میں حکومت کو دو قسم کی تجاویز دی گئی ہیں، جن میں سے ایک کے مطابق ملک میں پیٹرول اور

ڈیزل کی قیمتوں میں 2 روپے فی لٹر کے حساب سے کمی کی جاسکتی ہے، جب کہ دوسری تجویز میں کہا گیا ہے کہ پیٹرولیم لیوی کی قیمتوں میں اضافہ کرکے موجودہ قیمتوں کو برقرار رکھا جائے، اس حوالے سے حتمی فیصلہ آج ہونے والے وزارت خزانہ کے اجلاس میں کیا جائے گا۔ بتایا گیا ہے کہ ملک میں جاری کی جانے والی نئی قیمتوں

کا اطلاق کل سے ہوگا اور یہ قیمتیں آئندہ 15روز تک برقرار رہیں گی۔ واضح رہے کہ اوگرا کی طرف سے 16 اکتوبر کو پیٹرولیم ڈویژن کو ارسال کی گئی سمری میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں موجودہ سطح پر رکھنے کی سفارش کی گئی تھی ، ذرائع کے مطابق حکومت اس وقت فی

لیٹر ڈیزل پر 30روپے، پٹرول پر 27روپے 32پیسے پیٹرولیم لیوی وصول کر رہی ہے اورمٹی کے تیل پر فی لیٹر 11روپے 43پیسے پٹرولیم لیوی عائد ہے۔ خیال رہے کہ 28 جولائی کواقتصادی رابطہ کمیٹی(ای سی سی) نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ہر 15 روز بعد ردوبدل کی منظوری دے دی تھی۔ سلام آباد میں مشیر خزانہ حفیظ شیخ کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہوا تھا۔ اجلاس میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مہینے کے بجائے پر 15 روز بعد ردوبدل کی منظوری دی گئی تھی، جب کہ کابینہ کی منظوری کے بعد فیصلے کا اطلاق 15 اگست سے ہوگیا تھا، اسی حوالے سے ایک بار پھر 15روز گزرنے پر اوگرا کی طرف سے سمری بھیج دی گئی ، جس کے تحت پاکستان میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی امکان ہے۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎