Android AppiOS App

بینظیر بھٹو شہید اینٹوں پر بیٹھ کر ملاقات کرتی تھیں ۔۔۔ نواز شریف نے ان کے ساتھ۔ کیا کیا؟۔۔۔اعتزاز احسن نے قوم کو ہلا دینے والے انکشافات کر دئیے

  منگل‬‮ 20 اکتوبر‬‮ 2020  |  13:53

پیپلزپارٹی کے رہنما بیرسٹر اعتزاز احسن نے ایکپروگرام میں بتایا ہے کہ نواز شریف کے دور میں کس طرح بینظیر بھٹو پر مظالم ڈھائے گئے ،سابق وزیراعظم نواز شریف نے اپنے دور حکومت میں بینظیر بھٹو شہید کو کیسی تکلیفیں دیں اعتزاز احسن نے نجی ٹی وی چینل کے ایک

پروگرام ’پاور پلے‘ میں بتادیا۔نجی ٹی وی چینل کے ایک پروگرام ’پاور پلے‘ میں گفتگو کرتے ہوئے پیپلزپارٹی رہنما بیرسٹر اعتزاز احسن نے کہا کہ بی بی صاحبہ آصف زرداری سے ملنے بلاول، بختاور کو ساتھ لے کر زرداری کے قید خانے میں جایا کرتی تھیں، انہیں بچوں سمیت سخت گرمی میں اینٹوں پر بیٹھ کر ملاقات کے لیے انتظار کرایا جاتا تھا۔انہوں نے بتایا کہ ایک مرتبہ میں نے سپرنٹنڈنٹ پر غصہ کیا تو بی بی

نے مجھے روک دیا، بی بی نے کہا کہ اعتزاز آپ غصہ کرو گے تو یہ سمجھیں گے کہ ہم تکلیف میں ہیں۔اعتزاز احسن نے کہا کہ یہ سب کچھ بینظیر بھٹو شہید کے ساتھ نواز شریف کے دور حکومت میں کیا گیا۔انہوں نے کیپٹن (ر) صفدر پر

تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ان کے اس فعل سے مجھ سمیت بہت سے لوگوں کی دل آزاری ہوئی ہے، مزار کے تقدس کا خیال رکھنا چاہئے تھا۔ وہ لوگ وہاں بس حاضری دینے گئے تھے ایسے حالات میں انہیں بہت سوچ سمجھ کر کوئے بھی قدم اٹھانا چائ تھا،پیپلزپارٹی رہنما نے کہا کہ میرے خیال میں نہال ہاشمی انہیں روکنے کی کوشش کررہے تھے اور وہ پریشان تھے کہ یہ ہو کیا رہا ہے، جرم تو ہوا ہے قانون کو اپنا راستہ لینا چاہئے تھا۔ایک سوال کے جواب میں اعتزاز احسن نے کہا کہ سندھ حکومت ایف آئی آر واپس لینے کا حق رکھتی ہے، کیپٹن (ر) صفدر کی ضمانت آج نہ ہوتی تو چار دن بعد ہوجاتی اس پر کسی کو پریشان نہیں ہونا چاہئے لیکن مزار کے تقدس کی پامالی تو کی گئی ہے۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎