Android AppiOS App

50 روز بعد سب سے زیادہ کورونا کیسز ۔۔۔۔ پاکستان میں کورونا وائرس کی دوسری لہر ، کیسز اور اموات کی تعداد کتنی ہوگئی ؟ تازہ ترین خبر

  جمعہ‬‮ 16 اکتوبر‬‮ 2020  |  13:02

پاکستان میں کورونا وائرس سے متعلق آگاہی فراہم کرنے والے مرکزی ادارے نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سنٹر (این سی او سی) کے مطابق پاکستان میں کووڈ 19 کی دوسری لہر کا خدشہ موجود ہے اور گذشتہ چند دنوں کے دوران متاثرین میں اضافہ دیکھا گیا ہے۔چیئرمین این سی او سی اسد عمر نے کہا ہے کہ قومی سطح پر گذشتہ روز

مثبت متاثرین کی شرح یعنی انفیکشن ریٹ 2.37 رہا۔ ’یہ تعداد 50 روز بعد بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے، پچھلی بار یہ سطح 23 اگست کو دیکھی گئی تھی۔۔۔ یہ کورونا کے پھیلاؤ میں اضافے کی واضح نشانی ہے۔‘بی بی سی کی ایک خصوصی رپورٹ کے مطابق ۔۔۔۔پاکستان میں 14 اکتوبر کو 755 افراد میں کووڈ 19 کی تشخیص اور 13 اموات ہوئیں۔ متاثرین

کی یہ تعداد 24 ستمبر کے بعد سے سب سے زیادہ رہی۔اسد عمر کے مطابق ’مظفرآباد اور کراچی میں مثبت متاثرین کی شرح بہت زیادہ ہے۔ لاہور اور اسلام آباد میں بھی متاثرین بڑھ رہے ہیں۔’وقت آگیا ہے کہ ہم کووڈ 19 کی احتیاطی تدابیر کو دوبارہ سنجیدگی سے لینا شروع کر دیں، ورنہ ہمیں سختیاں کرنی پڑیں گی جس سے لوگوں کا روزگار متاثر ہوگا۔‘فرانس میں کورونا وائرس کی دوسری لہر سے بچنے کے لیے

حکام نے پیرس سمیت نو شہروں میں رات کا کرفیو نافذ کردیا ہے جبکہ امریکی خاتون اوّل میلانیا ٹرمپ نے انکشاف کیا ہے کہ صدر ٹرمپ کے 14 سالہ بیٹے بیرن بھی کووڈ 19 سے متاثر ہوئے تھے مگر اب صحتیاب ہوچکے ہیں۔فرانس کے صدر ایمینوئل میکخواں نے ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ یہ نیا کرفیو سنیچر سے نافذ کردیا جائے گا اور اس دوران رات نو بجے سے صبح چھ بجے تک گھر سے باہر نکلنے پر پابندی ہوگی۔اس کے ساتھ فرانس میں صحت کی ہنگامی صورتحال کا بھی اعلان کردیا گیا ہے۔دریں اثنا یورپ میں کئی ممالک کورونا کی دوسری لہر سے نمٹنے کے لیے اقدامات کر رہے ہیں۔جرمنی نے ایسے علاقوں میں بارز اور ریستوراں بند رکھنے کا اعلان کیا ہے جہاں کووڈ 19 پھیلنے کا خدشہ زیادہ ہے۔ بدھ کے روز یہاں اپریل کے بعد پہلی بار 5000 افراد میں کورونا کی تشخیص ہوئی ہے۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎