Android AppiOS App

یا اللہ خیر ، اسلام آباد میں لیڈی ہیلتھ ورکرز کے دھرنے میں شریک عائشہ گلا لئی بارے انتہائی افسوسناک خبرآگئی

  جمعرات‬‮ 15 اکتوبر‬‮ 2020  |  17:38

اسلام آباد دھرنے میں شریک معروف سیاسی خاتون اور پاکستان تحریک انصاف گلالئی کی سربراہ عائشہ گلالئی کی طبعیت بگڑ گئی۔تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کی سابق رہنما عائشہ گلالئی نے اسلام آباد میں لیڈی ہیلتھ ورکرز کے دھرنے میں شرکت کی۔اس موقع پر انہوں نے میڈیا سے بھی گفتگو کی۔ عائشہ گلالئی کا

ویڈیو سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ یہ دھرنا ہماری ماؤں بہنوں کا ہے۔پولیو ورکرز کی خدمات کو حکومت تسلیم نہیں کر رہی ۔نا تو یہاں پر حکومت کا کوئی وزیر آیا ہے اور نہ ہی اپوزیشن جماعتوں سے کوئی آیا ہے۔میڈیا سے گفتگو کے دوران عائشہ گلالئی کی طبیعت اچانک بگڑ گئی۔جس کے بعد موقع پر موجود خواتین نے انہیں ایک طرف بٹھایا اور پانی پلایا۔ خیال رہے کہ وزیرستان

سے تعلق رکھنے والی عائشہ گلالئی پاکستان تحریک انصاف میں اہم کردار ادا کرتی رہیں لیکن 2017ء میں انہوں نے پارٹی چئیرمین عمران خان پر نازیبا پیغامات بھیجنے اور جنسی ہراساگی کا الزام عائد کیا اور پی ٹی آئی سے راہیں جُدا کر لیں۔ پی ٹی آئی سے راہیں

جُدا کرنے کے بعد عائدشہ گلالئی نے تحریک انصاف گلالئی کے نام سے اپنی پارٹی بنائی اور اسے الیکشن کمیشن میں رجسٹر کروانے کے بعد الیکشن 2018ء کے لیے بلے باز کا انتخابی نشان حاصل کیا۔ پی ٹی آئی کی منحرف رہنما اور تحریک انصاف گلالئی کی سربراہ عائشہ گلالئی کو پی ٹی آئی کے خلاف جانا اورپارٹی چھوڑنا مہنگا پڑا اور عام انتخابات 2018ء میں عائشہ گلالئی کوئی ایک کامیابی بھی نہ سمیٹ سکیں۔ عائشہ گلالئی کو قومی اسمبلی کی نشستوں سے شکست کا چوکا پڑ گیا۔ این اے 53 اسلام آباد سے بھی شکست ہی عائشہ گلالئی کا مقدر بنی تھی۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎