Android AppiOS App

’’اس کائنات کو اللہ پاک نے سمیٹ لینا ہے ‘‘ سورج مرنے والا ہے ، سائنس دانوں نے قیامت کی تاریخ بتا ڈالی

  بدھ‬‮ 14 اکتوبر‬‮ 2020  |  15:28

مسلمانوں کا عقیدہ ہے ، کہ یہ دنیا ایک دن ختم ہو جانی ہے اور اس کائنات کو اللہ نے سمیٹ لینا ہے جس کے بعد حشر کا میدان ہوگا اور نیکوکارون اور بدکاروں کا فیصلہ ہوگا ،اسلام میں‌قیامت کی ہولناکی کا مکمل منظر موجود ہے . لیکن سائنس دانوں کی طرف سے مختلف دعویں سامنے آتے ہیں‌. جو کہ وقت کے ساتھ بدلتے رہتے

ہیں‌. سائنس دانوں کا ماننا ہے کہ انہوں نے بالآخر یہ دریافت کرلیا کہ سورج کا خاتم ہ ہونےکے بعد کیا ہوگا اور یہ بات ہماری دنیا پر کس طرح اثر انداز ہوگی۔ ماہرین اس بات سے اتفاق کرتے ہیں کہ سورج کا خاتمہ کچھ 10 ارب سال بعد ہوگا۔ لیکن سورج کا خاتمہ کس طرح ہوگا یہ اب دریافت کیا گیا

ہے۔ پلینِٹری نیبیولا نامی ایک عمل کے مطابق جب سورج کے اندر پائی جانے والی ہائڈروجن جل جل کر ختم ہوجائے گی تو سورج ایک سُرخ گولے میں تبدیل ہوجائے گا۔ سورج پھیل کر اب سے 250 گناہ بڑا ہوجائے گا اور اس کا دائرہ دنیا تک پہنچ کر دنیا کو

ختم کر دیگا۔ البتہ اس وقت تک دنیا پر زندگی موجود ہونے کا امکان نہیں ہے۔ پلینِٹری نیبیولا کا عمل پہلے صرف چھوٹے ستاروں کے خاتمے کے لئے جانا جاتا تھا۔ جب کوئی بھی عام ستارہ ختم ہوتا ہے تو اپنے پیچھے دھول اور گیس چھوڑ جاتا ہے۔ یہ دھول اور گیس تقریباً 10 ہزار سال تک چمکتے رہتے ہیں۔ اس ہی نظارے کو سکائی لائٹس کہا جاتا ہے۔اور یہ بھی تسلیم کر لیا گیا کہ باقی ستاروں کے خاتمے کی طرح ہمارا سورج بھی ختم ہو جائے گا لیکن اس کے بعد کیا ہوگا اس کا ابھی تک علم نہیں‌اور نہ ہی سائنس دان اس کے بارے میں‌کچھ کہتے ہیں‌.

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎