Android AppiOS App

جمعہ کے روز ملک بھر میں ہڑتال کا اعلان کردیا گیا

  بدھ‬‮ 14 اکتوبر‬‮ 2020  |  13:03

کراچی میں مولانا عادل جان کی جانب لینے والوں کی عدم گرفتاری کیخلاف علماء کمیٹی نے ڈیڈ لائن پوری ہونے کے بعد جمعہ کے روز ملک بھر میں پرامن ہڑتال کا اعلان کر دیا۔ تاجر برادری، سیاسی تنظیموں اور ٹرانسپورٹرز سے بھی احتجاج میں شریک ہونے کی اپیل کر دی۔

علماء کا کہنا ہے کہ کسی ایک عالم کی جانب لینے والوں کو گرفتار نہیں کیا گیا، فرقہ واریت پھیلانے والے عناصر کو بے نقاب کیا جائے۔ علماء کا مزید کہنا ہے کہ ہم نے ایک عظیم شخصیت کھوئی ہے، پرامن احتجاج حق بنتا ہے۔ علماء نے کہا کہ 48 گھنٹے گزرنے کے باوجود کوئی پیشرفت نظر نہیں آرہی، کونسی حکومت ہمیں انصاف دے گی۔ کمیٹی کے قائم مقام سربراہ قاری اللہ داد نے کہا کہ تمام

مکاتب فکر کے جید علماء اور تمام مذہبی جماعتوں کے قائدین اہل مدارس، تنظیمات مدارس کے قائدین سے مشاورت کے بعد ملک بھر میں پرامن ہڑتال اور احتجاج کا فیصلہ کیا گیا ہے جس میں قوم، تاجر براداری ، سیاسی تنظیموں اور شہریوں سے پُرامن احتجاج میں

حصہ لینے کی اپیل ہے۔اجلاس میں جمیعت علماء اسلام، اہلسنت والجماعت، جمیعت علماء اسلام (ف)، اشاعۃ التوحید والسنتہ، سنی علماء کونسل، متحدہ دینی محاذ، انجمن دعوت اہلسنت، تنظیم العلماء کراچی پاکستان، سنی مجلس عمل، مجلس احرار سمیت دیگر مذہبی جماعتوں کے نمائندوں نے شرکت کی۔ کمیٹی کے قائم مقام صدر قاری اللہ داد نے کہا کہ ہم نے اپنا دست و بازو کھویا ہے ہم مزید میتیں اٹھانے کے متحمل نہیں، شیخ الحدیث حضرت مولانا عادل خان کوختم کرنے والوں گرفتار کیا جائے، عرصہ دراز سے علماء کو نشانہ بنانے کی تیای کی جارہی ہے کسی ایک عالم کو مارنے والے کو گرفتار نہیں کیا گیا، وفاقی اور صوبائی حکومتیں مولانا عادل خان کو ختم کے خلاف کارروائی تیز کریں۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎