Android AppiOS App

اچھا تو یہ بات تھی ۔۔۔!!! ٹک ٹاک پر پابندی دراصل کیوں لگائی گئی ؟ وفاقی حکومت نے اعلان کر دیا

  جمعہ‬‮ 9 اکتوبر‬‮ 2020  |  23:00

ڈاکٹر شہباز گل نے ٹک ٹاک سے متعلق کہا کہ نئے نظام کی تیاری اور نفاذ تک ٹک ٹاک پر وقتی پابندی لاگو رہے گی۔ان خیالات اظہار وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی روابط ڈاکٹر شہباز گل نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر کیا، انہوں نے ویڈیو شیئرنگ اپلیکیشن سے ٹک ٹاک سے متعلق کہا کہ پرائم منسٹر پورٹل پر

ٹک ٹاک سے متعلق ان گنت والدین کی شکایات موصول ہوئی تھیں۔ٹوئٹر پر جاری پیغام میں شہباز گل کا کہنا تھا کہ شکایات ملیں کہ ٹک ٹاک پر چھوٹے بچے نامناسب سرگرمیوں کا شکار ہورہے ہیں اور سرگرمیاں مذہب، ثقافت اور رہن سہن کے برخلاف ہیں۔رہنما پاکستان تحریک انصاف نے کہا کہ کمپنی کو شکایت کے ازالے کےلیے نظام متعارف کروانے کا کہا گیا ہے

اور نئے نظام کی تیاری اور نفاذ تک ٹک ٹاک پر وقت پابندی عائد رہے گی۔پرائم منسٹرپورٹل کے زریعے ان گنت والدین کی شکایات موصول ہوئیں کہ ٹک ٹاک پر چھوٹے بچے

نامناسب سرگرمیوں کا شکار ہورہے ہیں جو ہمارے مذہب، ثقافت اور رہن سہن کے برخلاف ہیں۔کمپنی کو شکایت کے ازالے کیلئے نظام متعارف کروانے کا کہا گیا ہے جس کی تیاری اور نفاذ تک وقتی پابندی لاگو رہے گی۔خیال رہے کہ کچھ دیر قبل پی ٹی اے نے ٹک ٹاک ایپ بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، اتھارٹی کا کہنا ہے کہ ٹک ٹاک کے خلاف بہت ساری شکایات موصول ہوئی تھیں جس پر ٹک ٹاک بلاک کرنے کی ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔پاکستان میں ٹک ٹاک کے شوقین افراد کی تعداد لاکھوں میں ہے جو اپنی ویڈیوز بنا کر ٹک ٹاک پر اپ لوڈ کرتے ہیں، اس دوران ہزاروں نوجوان خطرناک انداز میں ویڈیو بنا کر ایپ پر ڈاؤن لوڈ کرتے ہیں جس کے باعث گزشتہ ایک سال کے دوران درجنوں نوجوان اپنی زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎