Android AppiOS App

نواز شریف نے اپنا کاروبار اسرائیل منتقل کرنے کے بدلے پاکستان کے جوہری راز بیچنے کیلئے اسرائیلی سفیر سے ملاقات کی یا نہیں؟ سچائی سامنے آگئی ، تہلکہ خیز انکشافات

  ہفتہ‬‮ 3 اکتوبر‬‮ 2020  |  18:41

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی نے آن لائن غلط معلومات پر مبنی اپنے فیکٹ چیکس جاری کردئیے۔ اے ایف پی کے مطابق فیس بک پر متعدد پوسٹوں میں سیکڑوں بار ایک فوٹو شیئر کیا گیا جس میں دعویٰ کیا گیا کہ سابق وزیر اعظم پاکستان نواز شریف اپنا کاروبار اسرائیل منتقل کرنے کے بدلے پاکستان کے جوہری راز بیچنے کیلئے اسرائیلی سفیر سے ملاقات کر رہے ہیں۔ ایجنسی کے مطابق یہ دعویٰ جھوٹا ہے کیونکہ جرمن پرچم کو اسرائیلی جھنڈے سے تبدیل کرنے کے لئے تصویر کو ڈاکٹر کیا گیا تھا۔ اصل تصویر 2013 میں اسلام آباد

میں لی گئی تھی جہاں نواز شریف سابق جرمن وزیر خارجہ گائڈو ویسٹر ویل سے ملاقات کر رہے تھے۔ڈیموکریٹک چیلنجر جو بائیڈن کے ساتھ امریکی صدر کے پہلے مباحثے میں صدر

ڈونلڈ ٹرمپ نے یہ دعویٰ کیا کہ میل ان ووٹنگ سے فراڈ کی راہ ہموار ہوگی جسے آپ نے کبھی نہیں دیکھا ہے۔ لیکن حکام اور ماہرین کا کہنا ہے کہ صدر غلط ہیں؛کسی بھی مطالعے سے امریکا میں بڑے ، مربوط ووٹر فراڈ کے ثبوت سامنے نہیں آئے ہیں۔ ایک شاہراہ پر گاڑیوں کے خلاف بظاہر مسلح حملہ کی فوٹیج بھی دکھائی دیتی ہے جس میں یہ دکھایا گیا ہے کہ نائیجیریا کے شورش زدہ ریاست بورنو ، باباگنہ زولم کے قافلے کے خلاف نائیجیریا کے اسلام پسند گروہ بوکو حرام کا تیسرا حملہ ہے۔ تاہم یہ دعویٰ جھوٹا نکلا۔یہ کلپ زولوم کے قافلے پر حملوں سے پہلے کا ہے اور اسے کینیا میں فلمایا گیا تھا جب پولیس نے ایک سیاسی ریلی تو منتشر کیا تھا۔ فیس بک ، ٹویٹر اور مختلف نیوز ویب سائٹ پر ایک بڑی تعداد میں مجمع کی تصویر بار بار شیئر کی گئی تھی جس میں دعوی کیا گیا کہ اگست 2020 میں متنازع انتخابات کے بعد بیلاروس میں حالیہ احتجاج دکھایاگیا ہے۔ ایک ویڈیو کو فیس بک ، یوٹیوب اور ٹویٹر پر متعدد پوسٹوں میں دس لاکھ سے زیادہ بار دیکھا گیا جس میں دعوی کیا گیا کہ اس میں کارڈ سے پیسوں کی ادائیگی سے قبل ڈرون فوری نوڈلز کا باکس ڈلیور کرتا ہے۔

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎