Android AppiOS App

ٹڈی دل کا فصلوں پر حملہ ، کسان کس منفرد انداز سے بھگانے کی کوشش کرتے رہے ؟دیکھنے والے حیران رہ گئے

  بدھ‬‮ 29 جنوری‬‮ 2020  |  18:39

پاکپتن کی تحصیل عارف والا اور گرد و نواح میں فصلوں پر ٹڈی دل نے حملہ کر دیا ، کسان ڈھول اور ٹین کے ڈبے پیٹ پیپ کر ٹڈیوں کو بھگانے کی کوششیں کرتے رہے ۔تفصیلات کے مطابق ٹڈی دل نے دریائے ستلج کے نواحی دیہات کے بعد عارف والا کے علاقے اڈہ رنگ شاہ میں گندم، آلو اور دیگر فصلوں پر حملہ کر دیا ہے۔

اس علاقے کے کسان ڈھول اور ٹین کے ڈبے بجا کر اور اسپرے کر کے اس آفت کو بھگانے میں مصروف رہے محکمہ زراعت کا کہنا ہے کہ ٹڈی دل رات کو درختوں پر بسیرا کرتا ہے اور سورج نکلنے کے بعد درختوں سے فصلوں پر حملہ آور ہوتا ہے، فی الحال اس کے حملے سے فصلوں کو نقصان نہیں پہنچا

ہے۔بڑھتے ہوئے ٹڈی دل کے حملوں کے بعد زرعی یونیورسٹی فیصل آباد میں ٹڈی دل پر تحقیق کے لیے ملک کا پہلا ریسرچ اینڈ ڈیولپمنٹ سینٹر قائم کر دیا گیا ہے۔فیصل آباد زرعی یونیورسٹی کے ماہرینِ حشرات کے مطابق ٹڈی دل کے حملوں کو روکنے کے لیے وفاقی ادارہ پلانٹ پروٹیکشن ڈیپارٹمنٹ فنڈز اور اسپرے کے لیے جہاز دستیاب نہ ہونے

سے ٹڈی دل کے راستے میں بروقت مزاحمت نہیں کر سکا اور اس تاخیر سے ٹڈی دل کو پھیلنے کا موقع مل گیا۔ٹڈی دل کی روک تھام کے لیے فیصل آباد زرعی یونیورسٹی میں قائم کیے گئے پہلے ریسرچ اینڈ ڈیولپمنٹ سینٹر نے ایگری کلچر سائنسز کے 100 طلبہ کو فوری طور تربیت دے کر پنجاب کے 36 اضلاع میں بھجوانے کے انتظامات کیے ہیں،یہ طلبہ کسانوں کی راہنمائی کے ساتھ ساتھ ٹڈی دل کے حملوں سے ہونے والے تمام نقصانات پر جائزہ رپورٹ بھی تیار کریں گے۔فیصل آباد زرعی یونیورسٹی کے ماہرین کے مطابق ٹڈی دل سے نمٹنے کے لیے بر وقت اقدامات تو نہیں کیے جا سکے تاہم اب وزارتِ زراعت اور زرعی تحقیقاقی ادارہ مل کر ایک نیشنل ایکشن پلان کی منظوری کے لیے بل پارلیمنٹ میں پیش کرنے کی تیاری کر رہے ہیں تاکہ آئندہ فصلوں کو ٹڈی دل سے محفوظ رکھا جا سکے۔‎

انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎