Android AppiOS App

کامیابی کے دس سنہری اصول

  منگل‬‮ 21 مئی‬‮‬‮ 2019  |  10:47

سب سے پہلا اصول اپنی کمزوریوں کو بھول جاؤ۔ صرف اپنی خوبیوں پر توجہ دو اور ان کو اپنا خزانہ جانو۔ جن کاموں میں مہارت حاصل نہ ہو ان پر مزید اور لگاتارمحنت کرو۔ دوسرا اصول اپنا وقت ضائع کرنا بند کر دو۔ ٹی وی دیکھنا یا کوئی بھی ایسا مشغلہ جس میں تمہیں لطف ملتا ہے اس پر کم سے کم وقت سرف کرو۔ اپنا کام کرو۔ جتنا ہو سکے کام پر دھیان دو۔ تمہارا اصل مقصد ایک اچھا گھر اور گاڑی کا حصول ہے کیونکہ

ساری دنیا یہی حاصل کرنا چاہتی ہے اس کے لیے دن رات محنت اور لگن درکار ہوتے ہیں۔ تمہارے پسندیدہ مشغلے تمہیں ان چیزوں کے حصول میں کبھی مدد نہیں دے سکتے۔ انسان اپنی پسند کے کام کر کے کبھی

کامیابی کی بلندیوں کو نہیں چھو سکتا۔ انسان جب اپنے دل اور مرضی کے خلاف چلتاہے تب ہی اسے کچھ قابل قدر حاصل ہو سکتا ہے۔تیسرا اصول ہر انسان کا برا دن آتا ہے۔ ہمیشہ ایسے حالات بنتے رہیں گے جو تمہاری رضا کے بالکل بر خلاف ہوں گے۔ایسے دنوں کو اپنے سر پر سوار مت کرو۔ سب کو دھکے کھانے پڑتے ہیں تب ہی وہ کائی مقام بنا پاتے ہیں۔ کوشش کرو کہ جب بھی ہمت ہار جاؤ تو یاد رکھو کہ تم نے یہ راستہ خود چنا ہے اور کامیابی کا کوئی آسان راستہ ہوتا ہی نہیں ہے۔ اپنا کام جاری رکھو۔

ہمیشہ یاد رکھو کہ کامیابی کا سفر مشکلا ت اور مصائب سے عبارت ہوتا ہے۔ کسی کو بیٹھے بٹھائے کامیابی نہیں ملی اور اس بات سے ہمت پکڑو۔ کامیابی کا سفر تنہائی اور محنت سے ہی طے کیا جا سکتاہے۔ دماغ میں جو بھی آئیڈیا آتا ہے اس پر عمل کرو۔ کسی آئیڈیے کا کوئی فائدہ تب تک نہیں ہوتا جب تک انسان اس پر عمل درآمد نہیں کرتا ہے۔ اپنے ہر اچھے اور تخلیقی خیال کو عملی جامہ پہناؤ۔ خیالی پلاؤ سے ناکامی انسان کا مقدر بن جاتی ہے۔ پانچواں اصول یہ ہے کہ کوئی بھی کام کرو تو اس کے ساتھ جذباتی لگاؤ پیدا کرو۔ جب کام سے جذباتی لگاؤ ہو گا تب ہی وہ کام باقیوں کے کام سے الگ اور بہتر نظر آئے گا۔ چھٹا اصول جب بھی اپنا کام یا کاروبار شروع کرو تو اس کے لیے تمہارا اس میں دل لگنا بہت اہم ہے۔ اگر کام کو دل سے کرو گے تو ہی وہ پایہ تکمیل تک پہنچے گا، ورنہ وہ کام بیچ میں ادھورا رہ جائے گا اور حاصل حصول خاک کے علاوہ کچھ بھی نہیں ہو گا۔

لوگوں کے ساتھ رویہ نرم رکھو، جن لوگوں کے ساتھ کام کرنا ہے ان کے ساتھ نرمی برتنے سے تمہارا اور باقی سب کا کام بہتر ہو سکتا ہے۔ ساتواں اصول اگر تم باقیوں کی طرح سے کام نہیں کرتے یا کر سکتے تو اس بات کو پہلے خود مان لو اور پھر ایسے طریقہ کاربناؤ جن سے تم اپنا کام بخوبی ر سکو۔ اگر کوئی کام تم سے نہیں ہوتا یا ہو سکتا تو ایسے لوگ بھرتی کرو جو وہ کام انجام دے سکتے ہوں۔اگر تمہارا کام کرنے کا طریقہ منفرد ہے تو اس بات پر دل شکستہ ہونے کے بجائے فخر کرو۔ یاد رکھو کہ تم کون ہو اور اس میں شرم محسوس مت کرو۔ آٹھواں اصول: یہ بات پہچاننے کی کوشش کرو کہ کام میں کیا چیز اصل میں اہم ہے۔ صرف ان چیزوں پر توجہ مرکوز رکھو۔ بہت سے کام در اصل بالکل اہم نہیں ہوتے اور ہم ان پر بھی اچھا خاصا وقت برباد کرتے رہتے ہیں۔ ان کو علیحدہ کرو اور ان پر وقت ضائع کرنا بند کر دو۔ اگر کسی نے ایک ویب سائٹ بنائی ہو اور

اس سے اپنی کمپنی کی مارکٹنگ کرنی مقصودہو تو اس میں ڈالا گیا مواد ضرور اہم ہے مگر اس میں گرائمر کی غلطیوں پر وقت ضائع کرنا بے مقصد ہے۔ جتنے مواد سے بات آگے منتقل ہو جاتی ہے بس اتنا مواد ٹھیک ہے۔ اسی طرح اور کاموں میں بھی دیکھو کہ کیا کیا کچھ غیراہم ہے اور اس پر زور مت دو۔سب سے اہم اور نواں اصول بہت واضح ہے کہ کسی بھی کام کو نہ کر پانے پر بہانے مت بناؤ۔ جو تمہاری ذمہ داری ہے اس کو تمہارے سوا کسی اور نے نہیں نبھانا۔ جب کوئی کام نہیں کر پائے تو اس کی پوری پوری ذمہ داری قبول کرو۔ ایک مثبت سوچ کا آپ کے کام میں بہت اہم کردار ہوتا ہے۔

کوشش کرو کہ اپنا رویہ اور سوچ ہر دم مثبت رکھو۔دسواں اور آخری اصول جو سب سے زیادہ اہمیت کا حامل ہے وہ یہ ہے کہ محنت کرو۔ محنت مشقت کے علاوہ کسی انسان کے پاس کوئی ایسا نسخہ موجود نہیں ہوتا جو انسان کو کامیابی کی راہ پر گامزن کر سکے۔ جو انسان محنت کرتا ہے صرف وہ ہی کامیاب ہو سکتا ہے۔ آج تک کوئی شخص بھی بیٹھے بٹھائے امیر اور کامیاب نہیں بنا۔ کسی کی مثال ایسی نہیں ہے جو رات کو سویا اور صبح بیدا ر ہوا تو اس کی کایا پلٹ گئی ہو۔ ہر انسان ایک زنجیر میں جکڑا ہوا ہے اور اسے اپنے حصے کا کام بذات خود ہی کر کے اپنا بوجھ اٹھانا ہے۔ کوشش کرو کہ اپنے کام میں مہارت حاصل کر لو۔