کالا سیاہ سانپ

  ہفتہ‬‮ 22 ستمبر‬‮ 2018  |  14:00

رات کے اڑھائی بجے اچانک کھٹ پٹ سے آنکھ کھلی آواز مسلسل کسی چیز کے گھسیٹنے سے بہت قریب سے آ رہی تھی جیسے ہی ڈرتے ہوئے بلب روشن کیا اور کمرے کا ماحول دیکھا اور دیکھتے ہی میرے تو ہاتھوں کے طوطے مینا کبوتر سب اڑ گئے دیکھتا کیا ہوں کہ ایک کالا سیاہ سانپ جو کہ ہماری ڈیڑھ لاکھ کی فریج کے اوپر بھن پھلائے بیٹھا ہے بیگم کو جلدی سے بیڈ سے اٹھایا جس نے کمرے میں اس موٹے تگھڑے سانپ کو دیکھ جو چیخ ماری یقینًا اس آواز نے ساتواں آسمان تو چھوا ہی

ہو گا.

فوراً وائپر اٹھا کے سانپ کو کمرے سے نکالنے کی ناکام سی کوشش شروع کر دی اور ساتھ ہی بیگم کو ساتھ ہمسائے کو کال کرنے کا بول دیا اب جناب من کیا بتاؤں آپکو سانپ نے تو جیسے ہمارے کمرے کو اپنا ہی سمجھ لیا ہوڈیڑھ لاکھ کی فریج سے جو رینگا تو ساتھ پڑے تین لاکھ کی ڈریسنگ پر جا بیٹھا اس سے پہلے میرے دوستوں کہ بیگم دیکھ لیتی اپنی جان کی پرواہ کیے بنا سانپ کو مزید ڈرا کر باہر نکلنے کے لیے وائپر سے ڈرایا پر نا جی اس نے تو جیسے قسم ہی کھا لی ہو ڈریسنگ سے رینگتا ہو ساتھ پڑھے ہوئے پچھتر ہزار کی نئی ایل سی ڈی کے اوپر جا چڑھا منہ سے سوں سوں کی آوازیں نکال کے جیسے ہمیں ہی کمرہ بدر کرنے کی دھمکی لگا رہا ہو اتنی دیر

میں ہمسائے سے بھی لوگ آ گئے اور اس سانپ کو ٹھکانے لگانے کی سوچنے لگے اس وقت تک سانپ ہماری نئی ایلسی ڈی سے اتر کے ہمارے بیڈ پر جو کے چند ہفتے پہلے چنیوٹ سے پورے سات لاکھ میں بنوا کے لایا تھا اس کے وسط میں نئی نویلی دلہن بنا شرما تے ہو ئے انداز میں براجمان ہو بیٹھا بیگم کو تو غشی کے دورے پڑھ رہے تھے کہ یہ آفت کب ٹلے گی اب باقی ساتھیوں کی مدد سے سانپ کو جو ڈرایا دھمکایا تب اسکو بھی شرم آ ہی گئی اور بیڈ سے سیدھا نیچے کی طرف لپکا فرش پر بچھے ایک لاکھ کے ایرانی قالین سے رینگتا ہوا گرے نائٹ کے مہنگے پتھر پر سے ہوتا ہوا باہر کھڑی نئ لینڈ کروزر کے نیچے سے جب سٹیل کے بنے گیٹ کے پاس پہنچا تب ہمارے گارڈ نے اس پر اپنی نئی پسٹل سے فائر کھول دیا جس سے سانپ صاحب موقع پر ہی دم دے گئے تو دوستوں یوں ہم بال بال بچے اور اس آفت سے جان بچائی….

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎